PDA

View Full Version : Ye Kiya Hova - Khalid Ahmad - 22nd May 2012



Realpaki
22nd May 2012, 09:14 AM
بالآخر وہی ہوا، جس کا ڈرتھا! حضرتِ پرویز مشرف کے عہدِ اقتدار کی مقتدر ترین شخصیت کے چہرے پر پڑا ہوا نقاب بھی اُتر گیا! ستم ، تو، یہ ہے کہ یہ نقاب حضرتِ پرویز مشرف نے بہ نفسِ نفیس، اپنے ہی مبارک ہاتھوں سے کھینچ پھینکا! ایک اخباری اطلاع کے مطابق جنابِ راشد قریشی کروڑوں روپے کی بدعنوانی کے الزامات کے تحت آل پاکستان مسلم لیگ اور مشرف فاﺅنڈیشن سے بیک وقت فارغ کر دیئے گئے ہیں! اور سیاسی جماعتوں پر خاندانی افراد کے تسلط کے خلاف انقلابی رحجان کے سب سے توانا نمائندے حضرتِ پرویز مشرف بھی اپنے ایک قریبی عزیز جنابِ مقصود معین پر انحصار کرنے کے لیے مجبور ہو گئے ہیں! لہٰذااُنہوں نے آل پاکستان مسلم لیگ کا خزانہ بھی اُنہیں کے محفوظ ہاتھوں میں دے دیا ہے!
آل پاکستان مسلم لیگ کے صدر حضرتِ پرویز مشرف نے اپنا ایک بازو ،تو، اپنے ہاتھوں آپ کھینچ پھینکا ہے! اور ہم دوسرے ہاتھ کی پانچوں انگلیوں پر نگاہ جمائے سوچ رہے ہیںکہ یہ بے چاری کب تک یونہی گھی میں پڑی رہیں گی؟ کہیں ایسا نہ ہو کہ اُنہیں اپنی زندگی کے تحفظ کے لیے حضرت ِپرویز مشرف کا سر بھی اسی کڑاہی میں کھینچ لینا پڑے!
حضرتِ پرویز مشرف پرائی چھوڑ کر اپنی آپ نبیڑنے کے کام سے لگ گئے ہیں! مگر اُن کے پروُردہ اُنہیں کے ایجنڈے کے ساتھ گلی گلی گھومتے دِکھائی اور ٹَلّی بجاتے سنائی دے رہے ہیں! حضرتِ شیخ رشید احمد نے لاہورکینٹ میں لاہوریوں سے خطاب کرتے ہوئے انہیں اُٹھ کھڑے ہونے کا پیغام دے دیا ہے! اور اُنہیں بتا دیا ہے کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی! اور لاہوریوں نے اُن کی مرضی کے اُمیدوار منتخب نہ کروائے، تو، ایک خونی انقلاب لاہور کے در و بام ساتھ بہا لے جائے گا!
حضرتِ شیخ رشید احمد نے مختلف حکومتوں میں رہنے کے تجربات کا نچوڑ بیان کرتے ہوئے فرمایا ہے کہ اُنہوں نے بڑی سے بڑی چور حکومت دیکھ رکھی ہے! مگر ایسی چور حکومت پہلے کبھی نہیں دیکھی! انہوں نے کہا کہ گیلانی خاندان نے پورا ملک لوٹ لینے کا منصوبہ بنا رکھا ہے! اور وہ اُن کا یہ منصوبہ ناکام بنانے کے لیے میدانِ عمل میں نکل آئے ہیں! اور بتایا کہ وقت آچکا ہے! مگر ، کس کا؟یہ اُنہوں نے بتانا پسند نہیں فرمایا!
اِدھرلاہور میں حضرتِ شیخ رشید احمد نے چور حکومتوں کا ذکر کیا! اُدھر حضرتِ پرویز مشرف نے مشرف فاﺅنڈیشن اور آل پاکستان مسلم لیگ کے خزانے میں کروڑوں روپے کی بدعنوانی کے الزام پر میجر جنرل ]ریٹائرڈ[ راشد قریشی پارٹی اور فاﺅنڈیشن سے نکال باہر کیے! دیکھنا یہ ہے کہ حضرتِ پرویز مشرف کے دورِ اقتدار میں اُن کے دست و بازو کیا کچھ کرتے رہے؟ ہمیں یقین ہے کہ اگر اس سلسلے میں ذرا سی بھی تگ و دو کی گئی،تو، اور بہت سے لوگوں کے نام بھی سامنے آ جائیں گے! اس سلسلے میں حضرتِ پرویز مشرف کے ساتھ ایک نئے انٹرویو کا اہتمام کافی ہو گا! اِدھر کسی اینکر پرسن نے اُنہیں آن لائن انٹرویو پر راضی کیا نہیں! اُدھر یہ رازوں بھرا بستہ کسی طشت کی طرح ازخود چھت سے بازار میں آ رہے گا! اور سب کچھ دانہ دانہ ہوکر سب کے سامنے آ جائے گا!خدا بھلا کرے جنابِ مقصود معین کا کہ وہ حضرتِ پرویز مشرف کے قریبی ہونے کی بنا پر پاکستان کی تمام سیاسی پارٹیوں کے خزانوں کی حفاظت کے لیے پارٹی کے صدر کا قریبی عزیز ہوناایک ناقابلِ اعتراضامر بنا گئے! اب تمام پاکستانی سیاسی پارٹیوں کے صدور اپنا کوئی نہ کوئی قریبی عزیز اس عظیم الشان عہدے کے لیے نامزد کر سکتے ہیں!