View RSS Feed

Fawad Afzal

تھر کی صورتحال بدتر ہے، حکمران ہوش کے ناخن &#1

Rate this Entry
Quote Originally Posted by Fawad Afzal View Post
#JangNews:
تھر کی صورتحال بدتر ہے، حکمران ہوش کے ناخن لیں، ڈاکٹر عامر لیاقت


جیو کے عالم آن لائن سے براہ راست نشریات، مولانا بشیر قادری کی اقتداء میں نماز استسقاء
مولانا حسن، اکبر درس، مہاراج لجپت، بھارومل کی گفتگو، عامر لیاقت نے کھانا بنا کر متاثرین کو کھلایا



@AamirLiaqiuat #AalimOnline' #Thar #Mithi #Geo #Pakistan #MSF
http://beta.jang.com.pk/<wbr>NewsDetail.aspx?ID=180432


کراچی (اسٹاف رپورٹر)جیوکے شہرۂ آفاق عالم آن لائن کے میزبان ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کایہ طرۂ امتیاز رہا ہے کہ ملک کے کسی بھی حصے میں جب بھی قوم پر کڑاوقت آیا،انہوں نے وہاں پہنچ کر لوگوں کے جذبات کی ترجمانی کی اور دکھی انسانیت کی خدمت کے ساتھ متاثرین پر بیتنے والی تکالیف سے ناظرین کو آگاہ کیا ۔سوات میں آئی ڈی پیز کا معاملہ ہو یا اندرون سندھ سیلاب سے متاثرہ افراد کادکھ درد، عامرلیاقت حسین نے ہمیشہ اپنے اہل وطن کے جذبات ناظرین تک پہنچائے ۔حالیہ دنوں میں قحط سالی اور مبینہ سرکاری غفلت کی وجہ سے تھر پارکر کی بدترین صورتحال اور متاثرین کی حالت زار سے ناظرین کو آگاہ کرنے کے لیے عالم آن لائن کا خصوصی پروگرام تھرپارکرسے براہ راست نشر کیا گیاجس میںڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے مقامی رہنماؤں اورمتاثرین کے جذبات عوام تک پہنچائے،مولانابشیرفاروق قادری کی اقتدا میں نماز استسقاء اداکی گئی اور بارش کے لیے خصوصی دعائیں بھی مانگی گئیں۔ بعد ازاں ڈاکٹر عامر لیاقت نے اپنے ہاتھوں سے چکن کڑاہی تیار کرکے متاثرین کو کھاناکھلایا۔مٹھی کے دورافتادہ گاؤںپوہ سرکا سے پیش کیے جانے والے عالم آن لائن اسپیشل میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر عامرلیاقت حسین نے کہا کہ حکمران ہوش کے ناخن لیں، تھر کی صورتحال جیسی بیان کی جارہی ہے اُس سے کہیں زیادہ بدتر ہے ،اگر میڈیا نہ ہوتا تو لوگوں کو کبھی پتہ نہ چلتا کہ یہاں کے لو گ کس کرب میں مبتلا ہیں ۔ مقامی صورتحال کا تجزیہ پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ یہاں نہ پینے کے لیے پانی میسر ہے اور نہ کھانے کے لیے دووقت کی روٹی ،اسپتالوں میں عملہ غائب اور دوائیاں ناپید ہیں جس کی وجہ سے بدترین المیے نے جنم لیا۔ان کا کہناتھاکہ زیادہ تر ہلاکتیں پانی میں زہریلے اجزاء کی موجودگی اورطبی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے ہوئیں ۔انہوں نے بتایا کہ متاثرہ علاقوں میں مسلمان اور ہندوبرادری کے خوددارعوام سرکاری امدادنہ ملنے کے باوجودایک دوسرے کے دکھ درد میں برابر کے شریک ہیں اور غربت کے باوجود بڑی منظم اور مہذب زندگی گزار رہے ہیں۔تھر کے مقامی رہنما اور سماجی کارکن اکبر درس نے ڈاکٹرعامرلیاقت حسین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہاں زیادہ ترہلاکتیں طبی سہولیات کی عدم دستیابی اور اتائی ڈاکٹرز کی نااہلی کی وجہ سے ہوئیں اوربچوں کی اموات کا سلسلہ نیا نہیں بلکہ تین ماہ سے جاری ہے مگر حکومت نے کوئی نوٹس نہیں لیا۔انہوں نے یہ انکشاف بھی کیا کہ مقامی ڈسپنسری بااثرافراد کے زیر تسلط ہے اوراین جی اوزکاکرداربھی مایوس کن ہے جنہوں نے اب تک متاثرہ علاقوں کا رخ نہیں کیا ۔اس موقع پر مرکزی جمعیت اہل حدیث تھرپارکر کے امیرمولانا محمد حسن سموں نے تھر کی آواز اعلیٰ ایوانوں تک پہنچانے پر میزبان کا شکر یہ اداکرتے ہوئے کہا کہ قحط سالی کی ایک وجہ مویشیوں کا وبائی امراض میں ہلاک ہوجانا بھی ہے جس کی وجہ سے یہاں کے لوگ خوراک کے لیے ترس رہے ہیں ۔محکمہ جنگلات کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر مہاراج لجپت نے گفتگومیں حصہ لیتے ہوئے کہاکہ یہاں مسلمان اور بھیل ہندوکمیونٹی سمیت کئی اقوام اور قبائل سے تعلق رکھنے والے لوگ مل جل کر رہتے ہیںاو رکبھی امن وامان کا کوئی مسئلہ پیدا نہیں ہوتا۔ ہندوکمیونٹی کے نمائندے بھارومل نے پانی میں فلورائیڈ کی زیادتی کوبنیادی مسئلہ قراردیتے ہوئے بتایاکہ اس کے استعمال سے لوگ معذوری کاشکار ہورہے ہیں اورزیادہ تر لوگ جوڑوں کے درداوردانتوں کی تکالیف میں مبتلاہیں جبکہ متاثرہ خواتین کاکہنا تھا کہ یہاں پانی کا کوئی انتظام نہیں، امداد لینے جائیں تو ذلت آمیز سلوک کیا جاتا ہے۔پروگرام کے اختتام سے قبل متاثرین نے ڈاکٹرعامرلیاقت حسین کے ساتھ معروف روحانی شخصیت اور سیلانی ویلفیئر ٹرسٹ کے سربراہ مولانا بشیر فاروق قادری کی اقتداء میں نماز استسقاء اداکی اور اشکبارہوکر پروردگار سے باران رحمت کی دعائیں مانگیں۔پروگرام کے دوران محمودہ سلطانہ فاؤنڈیشن کے رضاکار متاثرین میں راشن اور روزمرہ استعمال کی ضروری اشیاء تقسیم کرتے رہے جبکہ ایم ایس ایف کے ہمراہ روانہ ہونے والے ڈاکٹر شان عالم اورڈاکٹر شاہدلوگوں کو طبی امداداورضروری ادویات فراہم کرتے رہے۔اس موقع پرمیزبان نے مقامی شخصیات مولانا ابراہیم،اشفاق میمن، عرفان جونیجواور عابد حسین جتوئی کا خصوصی شکریہ بھی اداکیا۔


تم زمین والوں پر رحم کرو، آسمان والا تم پر رحم کرے گا (الحدیث)۔
دکھیاروں کی امداد کے لیے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا ساتھ دیجیے


عالم آن لائن ۔۔دیکھیے تھر کی قحط زدہ علاقوں سے براہ راست
ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے ساتھ
آپ اپنی زکٰوۃ خیرات،عطیات یو بی ایل میں جمع کرواسکتے ہیں
پاکستان میں عطیات جمع کروانے کے لیے
اکائونٹ نمبر 4-3033-010, یو بی ایل، الرحمان برانچ، آئی آئی چندریگر روڈ، کراچی
ایڈریس: محمودہ سلطانہ فائونڈیشن، سیکنڈ فلور لہر منزل،
محمودہ سلطانہ اسٹریٹ، آئی آئی چندریگر روڈ، کراچی


Email: info@aamirliaquat.com, Twitter: @AamirLiaquat
Facebook.com/MSFTrust
Facebook.com/AalimOnlineGeo














Submit "تھر کی صورتحال بدتر ہے، حکمران ہوش کے ناخن &#1" to Digg Submit "تھر کی صورتحال بدتر ہے، حکمران ہوش کے ناخن &#1" to del.icio.us Submit "تھر کی صورتحال بدتر ہے، حکمران ہوش کے ناخن &#1" to StumbleUpon Submit "تھر کی صورتحال بدتر ہے، حکمران ہوش کے ناخن &#1" to Google

Tags: None Add / Edit Tags
Categories
Uncategorized

Comments