View RSS Feed

Fawad Afzal

اسلامی نظریاتی کونسل کی از سر نو تشکیل کی ج&#1

Rate this Entry
Quote Originally Posted by Fawad Afzal View Post
#JangNews #AalimOnline @AamirLiaquat #Geo
اسلامی نظریاتی کونسل کی از سر نو تشکیل کی جائے،علمائے کرام عامر لیاقت سے گفتگو


کونسل کو سیاست سے پاک کرکے عصری تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جائے، جیو کے عالم آن لائن میں گفتگو
عامر لیاقت سے گفتگو میں حمزہ قادری، خلیل الرحمان اور طاہر اشرفی کا سندھ اسمبلی کی قرارداد پر اظہار خیال

http://beta.jang.com.pk/<wbr>NewsDetail.aspx?ID=186278
کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی میں اسلامی نظریاتی کونسل کے خاتمے پرمتفقہ قراردادکی منظوری کو غیردانشمندانہ اقدام قراردیتے ہوئے ملک کے ممتاز علمائے کرام نے کہا ہے کہ اسلامی نظریاتی کونسل کی بعض سفارشات پر تحفظات کااظہار کیا جاسکتاہے تاہم انہیں بنیاد بناکر کونسل ہی کو ختم کردینا مسئلے کاحل نہیں ، اسے سیاست سے پاک کرکے عصر حاضر اورمعاشرتی تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جائے ۔جیونیوزسے براہ راست نشرہونے والے شہرۂ آفاق عالم آن لائن میں ڈاکٹر عامرلیاقت حسین سے گفتگو کرتے ہوئے جماعت اہل سنت سندھ کے نائب امیر علامہ سید حمزہ علی قادری نے کہا کہ انسان کو ہرشعبے میں مشاورت کی ضرورت ہوتی ہے لہٰذادینی مشاورت کے لیے کونسل کا قیام بھی ضروری ہے تاہم معاشرتی ضرورتوں کے مطابق اس کے اسٹرکچرمیں تبدیلی کی جاسکتی ہے ۔میزبان کی جانب سے پوچھے گئے ایک سوال کاجواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کم عمری کا مسئلہ عصر حاضر کا نہیں بلکہ نفس حاضر کا تقاضا ہے، کم سن بچیوں کے ساتھ ہونے والی درندگی اورغیرت کے نام پر قتل کے واقعات کو نظرانداز کرکے صرف کم عمری کی شادی جیسے معاملات پر سفارشات مرتب کرناظاہرکرتا ہے کہ اسلامی نظریاتی کونسل عصرحاضر کے تقاضوں سے ہم آہنگ نہیں ،اس میں تبدیلیوں کی ضرورت ہے ۔اس موقع پر گفتگو میں حصہ لیتے ہوئے مرکزی جمعیت اہل حدیث کراچی کے ناظم اعلیٰ ابو انشاء قاری خلیل الرحمن جاویدنے سندھ اسمبلی میں کونسل کے خاتمے کی قراردادکوعجلت کا شاخسانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ قرارداد منظورکرنے سے قبل کونسل کی حتمی سفارشات کا انتظار کرلیا جاتا تو بہتر ہوتا۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھاکہ بعض افرادرسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی کم عمری کی شادی کا حوالہ تو دیتے ہیں مگر 40 سالہ خاتون سے شادی کا ذکرکوئی نہیں کرتاجودین سے ناواقفیت کاثبوت ہے۔پروگرام کے دوران ڈاکٹر عامر لیاقت حسین سے ٹیلیفون پرگفتگو کرتے ہوئے متحدہ علماء کونسل کے چیئرمین حافظ محمد طاہر اشرفی کا کہناتھا کہ کونسل نے بعض امور پررائے دی ہے حتمی سفارشات مرتب نہیں کیں مگرانہیں جوازبناکربعض لبرل عناصر اسلامی شعار کو نشانہ بنارہے ہیں جوکہ نامناسب طرزعمل ہے۔ان کا کہناتھا کہ کونسل کی حالیہ سفارشات پرانہیں بھی تحفظات ہیں جنہیں مرتب کرتے وقت معاشرتی اورعصر حاضر کے تقاضوں کا خیال نہیں رکھا گیا مگراس کی بنیاد پرکونسل کے خاتمے کے مطالبے کو درست اقدام نہیں کہا جاسکتا۔ پروگرام کے آغاز میںسندھ اسمبلی کی متفقہ قرار داد پر مخصوص انداز میں تبصرہ کرتے ہوئے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے کہا کہ سندھ کے منتخب نمائندوں کی جانب سے تھر کے المیے پر مجرمانہ خاموشی اور اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات پر گرم جوشی معنی خیز ہے ۔انہوں نے کہا کہ اسلامی نظریاتی کونسل ایک اہم ادارہ ہے مگراس کے بعض اراکین نے سود اور دیگر غیر اسلامی افعال پر سفارشات کے بجائے صرف عائلی معاملات کو موضوع بحث بنالیا ہے جو درست نہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ دیگراداروں کی طرح اسلامی نظریاتی کونسل کو بھی سیاست کی نذر کردیا گیا ہے ، اس کی تشکیل نو کرکے اس میں ایسے علمائے کرام کو شامل کیا جائے جنہیں ٹی وی اسکرین کی زینت بننے کے بجائے صحیح معنوں میں دینی خدمت کاشوق ہو اوروہ معاشرتی وعصری تقاضوں کا ادراک بھی رکھتے ہوں۔اس موقع پرانہوں نے مکہ مکرمہ میں جعلی آب زمزم کی فروخت پر تشویش کا اظہار کیااورعلمائے کرام کی تائیدسے ایک مرتبہ پھر حکومت سی جمعے کی چھٹی بحال کرنے کی اپیل بھی کی ۔



عالم آن لائن کی وڈیوز، خبریں ، تصاویر اور تازہ ترین اپ ڈیٹس سے ہرلمحہ باخبر رہنے کے لیے سوشل میڈیا پورٹل فالو کیجیے

Alerts: Twitter.com/AalimOnlineGeo
Updates: Facebook.com/AalimOnlineGeo
Videos: DailyMotion.com/AalimOnlineGeo














Submit "اسلامی نظریاتی کونسل کی از سر نو تشکیل کی ج&#1" to Digg Submit "اسلامی نظریاتی کونسل کی از سر نو تشکیل کی ج&#1" to del.icio.us Submit "اسلامی نظریاتی کونسل کی از سر نو تشکیل کی ج&#1" to StumbleUpon Submit "اسلامی نظریاتی کونسل کی از سر نو تشکیل کی ج&#1" to Google

Tags: None Add / Edit Tags
Categories
Uncategorized

Comments