View RSS Feed

mubasshar

ڈاکٹرز کی ہڑتال ، مستقل حل کی ضرورت

Rate this Entry





پنجاب میں ڈاکٹروں کی ہڑتال کے دوران جاں بحق ہونے والے کس کے ہاتھوں پر اپنا لہو تلاش کریں۔ ہڑتال کیا ہے انسانیت کا جنازہ ہے ۔ زیر علاج معصوم بچے کی ڈرپ کھینچ لینا اور ماں باپ کی چیخ و پکار کو نظر انداز کر کے ہڑتال پر چلے جانا دل سوز واقعہ ہے جو مسیحائی جیسے مقدس پیشے کے منہ پر ایک طمانچہ سے کم نہیں۔ مطالبات منوانے کے لئے ہڑتال پر جانا ایک انتظامی معاملہ ہے اور مریضوں کے علاج سے انکار ایک غیر انسانی فعل ہے جس کی توقع ایک ڈاکٹر سے ہرگز نہیں کی جاسکتی۔ ڈاکٹری جیسے مقدس پیشے سے وابستہ افراد مطالبات منوانے کے لئے دیگر راستے بھی ڈھونڈ سکتے ہیں، اور اگر وہ اپنے موقف کو درست اور بر حق جانتے ہیں تو عدالت کے دروازے پر بھی دستک دے سکتے ہیں لیکن مسلسل ہڑتال پر چلے جانا اور جاں بلب مریضوں کے علاج سے انکار بہرحال ایک کریہہ جرم ہے جس کی ایک انسان دوسرے انسان سے توقع نہیں کر سکتا۔ حکومت کا غیر لچکدار رویہ اور سرد مہری بھی اپنی جگہ قابل مذمت ہے ۔ معاملات کو بگاڑنے سے بہتر ہے کہ اعلی سطح پر اس معاملے کو دیکھا جائے اور قابل قبول حل نکالا جائے۔ آئے دن ڈاکٹروں کی ہڑتال چاہے ان کے مطالبات بادی النظر میں جائز ہوں لیکن ہڑتال پر چلے جانا ہرگز قابل قبول صورتحال نہیں ہے۔ اس سے قبل یہ روش دیگر صوبوں میں بھی پھیلے حکومت کو موثر ایکشن لینا چاہئے، ڈاکٹروں کے جائز مطالبات مان کر ہڑتال کے خاتمے کی صورت نکالی جائے اور معصوم عوام کو اس کرب اور اذیت ناک صورتحال سے نجات دلائی جائے۔ پاک فوج سے ڈاکٹروں کی خدمات حاصل کرنا ایک عارضی حل ہے۔ صورتحال کو مزید بگڑنے سے بچایا جائے اور آئندہ کے لئے ایسی صورتحال کی بیخ کنی کی جائے۔

Submit "ڈاکٹرز کی ہڑتال ، مستقل حل کی ضرورت" to Digg Submit "ڈاکٹرز کی ہڑتال ، مستقل حل کی ضرورت" to del.icio.us Submit "ڈاکٹرز کی ہڑتال ، مستقل حل کی ضرورت" to StumbleUpon Submit "ڈاکٹرز کی ہڑتال ، مستقل حل کی ضرورت" to Google

Comments