امیدواروں کے لیے دینی امور سے واقفیت ضروری ہے، علمائے کرام
کراچی(اسٹاف رپورٹر)جیوکے شہرہٴ آفاق پروگرام عالم اور عالم میں ڈاکٹر عامرلیاقت حسین سے گفتگو کرتے ہوئے جید علمائے کرام نے کہا ہے کہ ہمارے اجداد نے آگ اور خون کے دریاعبورکرکے اسلامی ریاست کے قیام کے لیے جو قربانی دی تھی وہ اس امر کا تقاضاکرتی ہے کہ قوم کی نمائندگی کے لیے انتخابات لڑنے والے امیدواروں سمیت ہر ایک کو اسلام کی بنیادی تعلیمات سے واقفیت ہو۔ڈاکٹر عامرلیاقت حسین سے گفتگو کے دوران اظہارخیال کرتے ہوئے جماعت اہل سنت سندھ کے نائب امیر علامہ حمزہ علی قادری اورجامعہ دارالخیرکے مہتمم مفتی عثمان یار خان نے کہا کہ پارلیمنٹ کا کام دستور سازی ہے لہٰذا اس کے منتخب نمائندوں کے لیے اسلام سے بھرپور آگاہی ضروری ہے۔پروگرام کے آغازمیں ڈاکٹر عامرلیاقت حسین نے دینی لیکچرز اور محافل میلاد میں شرکت کے لیے امریکا میں گزارے گئے شب و روز کی مصروفیات سے ناظرین کو آگاہ کیا اور وہاں مقیم عاشقان مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے روح پرور جذبات لوگوں تک پہنچائے۔ انہوں نے امریکا میں مقیم خواتین کی ایثار پسندی اور اپنے زیورات مستحقین کی نذرکرنے کا بھی ذکر کیا اور خدمت خلق کے لیے اُن کے نیک جذبات پران کا شکریہ بھی ادا کیا۔بعدازاں اسٹوڈیومیں موجود جید علمائے کرام نے ناظرین کے سوالات کے براہ راست جوابات بھی دیے۔ریاکاری کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں علامہ حمزہ علی قادری نے کہا کہ پسندیدگی اور شہرت کی خواہش بذات خود بری چیز نہیں تاہم ریاکاری اور نمودونمائش سے بچنا چاہیے۔ووٹ کے تقدس کے حوالے سے مفتی عثمان یار خان کاکہنا تھا کہ ووٹ ایک امانت ہے جسے ذاتی مفادات سے بالاتر ہو کر کاسٹ کرنا چاہیے۔پروگرام کے دوسرے حصے میں ناظرین کی ایک بہت بڑی تعداد نے سیلانی ویلفیئر انٹرنیشنل ٹرسٹ کے سر براہ اورممتاز روحانی اسکالر مولانا بشیر احمد فاروق قادری سے مختلف مسائل پر روحانی وظائف دریافت کیے جن میں جادو کے توڑ، اولاد سے محرومی، کام میں بندش اور باہمی جھگڑے سے نجات کے مسائل شامل تھے جن کے حل کے لیے مولانا بشیر فاروق قادری نے قرآن کی روشنی میں وظائف بتائے۔پروگرام کے اختتام پرانہوں نے رقت انگیز دعا فرمائی اور بارگاہ خداوندی میں بخشش و مغفرت کی التجابھی کی۔
http://www.aamirliaquat.com/entries/Show/1413,Twitter: @aamirliaquat