جیو کے عالم اور عالم میں خوابوں کی تعبیر اور وظائف پرمبنی سلسلوں کی غیر معمولی پذیرائی



کراچی(اسٹاف رپورٹر) دنیا بھر میں مقیم کروڑوں ناظرین کی جانب سے جیوکے شہرہٴ آفاق پروگرام عالم اور عالم کے خوبصورت سلسلوںاک عالم خواب کا، تعبیر عالم سےاورمسائل آپ کے ،حل وظائف سے کو غیرمعمولی پذیرائی حاصل ہورہی ہے اور پروگرام کے آغاز سے ہی ٹیلی فون کالز کالامتناہی سلسلہ شروع ہوجاتاہے جو اختتام تک جاری رہتا ہے۔اس سلسلے میں گزشتہ روزبراہ راست نشر ہونے والے پروگرام میں ڈاکٹر عامر لیاقت حسین سے گفتگو کرتے ہوئے تنظیم المساجد پاکستان کے سربراہ اورعلم تعبیرکے ماہرمفتی عابدمبارک نے ناظرین کے مختلف خوابوں کی تعبیر بیان کرتے ہوئے بتایا کہ نبی کے سوا کسی کا بھی خواب حجت نہیں ہوتا لہٰذا محض خواب کی بنیاد پرکسی کو قتل جیسے سنگین جرم کا مرتکب قرار نہیں دیا جاسکتا۔خواب سے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خود کو میدان اور صحرا میں دیکھنا بزرگوں کی قربت نصیب ہونے کی علامت اور ہدایت ملنے کی نشاندہی کرتا ہے جبکہ خواب میں رسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی زیارت کرنا نہایت بلند منصبی کی دلیل ہے۔انہوں نے ناظرین کی رہنمائی کرتے ہوئے انہیں تاکید کی کہ خواب صرف اہلِ علم سے بیان کرنا چاہیے غیر ضروری طور پر ہر ایک کے سامنے خواب بیان کرنے کے مضر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔پروگرام کے آغاز میں علم تعبیر کے حوالے سے قرآن واحادیث کی روشنی میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے کہا کہ کسی خواب کے بارے میں یقین کے ساتھ نہیں کہا جاسکتا ہے کہ وہ خواب سچا ہے اور اس کا وقوع یقینی ہے،ان کا کہنا تھا کہ خواب اللہ کی طرف سے محض ایک رہنمائی ہوتی ہے اُسے حجت قرار نہیں دیاجاسکتا۔
www.aamirliaquat.com, Twitter: @aamirliaquat