ان اور رمضان کی آمد آمد ہے مگر ان مقدس مہینوں کی برکتوں میں حصے دار بننے کے بجائے ہم ان کی حرمت اور ایک دوسرے کے حقوق کو پامال کر رہے ہیں۔ ملک کے موجودہ منظر نامے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بدقسمت ہے وہ قوم جسے رجب، شعبان اور رمضان ملے اور وہ اس کی تقدیس سے محروم رہے اور تفریحات و تعیشات میں الجھ کر آخرت کو فراموش کردے۔ انہوں نے کہا کہ انتخابات کے بعد سے مظاہروں اور احتجاج کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ شروع ہوگیا ہے اور مقدس مہینوں کا کوئی لحاظ نہیں کر رہا۔ انہوں نے کہا کہ جن قوموں کے دلوں سے خوف خدا اٹھ جائے اور جوابدہی کا احساس باقی نہ رہے وہاں ایسا ہی ہوا کرتا ہ