#JangNews
طالبان محرم میں حملے روکدیں،حکومت مذاکراتی عمل نہ روکے، عامر لیاقت
Taliban Muharram Mein Hamly Rok Dain, Hakumat Muzakrati Amal Na Rokay - Dr @AamirLiaquat Husain

کراچی (جنگ نیوز) جیو نیوز کے معروف اینکر اور مذہبی اسکالر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے طالبان سے اپیل کی کہ طالبان محرم الحرام کے مہینے کی حرمت کو پامال نہ کریں اور اپنے حملے روک دیں ،جبکہ حکومت پر زوردیا ہے کہ طالبان سے مذاکرات ہونے چاہئیں، اتمامِ حجت بہت ضروری ہے،مذاکرات کے عمل کو کسی طرح رکنا نہیں چاہئے۔ وہ جیو نیوز کے پروگرام کیپٹل ٹاک میں حامد میر کی میزبانی میں ہونے والے مباحثے میں گفتگو کررہے تھے۔ مذکورہ مباحثے میں تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی اور سینئر صحافی زاہد حسین بھی شریک تھے۔ ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے کہا کہ ڈرون حملہ کر کے امریکا نے مذاکرات کو سبوتاژ کیا ہے۔ آپریشن کی بات کرنے والوں کو سوچنا چاہئے کہ اگر آپریشن ناکام ہوگیا تو پھر کیا ہوگا۔مذاکرات شروع ہونے سے قبل حکومت پاکستان کو حکیم اللہ محسود کے سر کی قیمت ختم کردینی چاہئے تھی۔ نیٹوسپلائی لائن بند ہونے سے ڈرون حملے بند نہیں ہوں گے، اس وقت ڈرون حملے حکومت پاکستان کی ملی بھگت سے نہیں ہورہے۔ انہوں نے کہا کہ طالبان خوارج ہیں، ان کی ساری نشانیاں خوارج جیسی ہیں، یہ اپنے سوا کسی کو اچھا مسلمان نہیں سمجھتے، ہم سب ان کے نزدیک کافر ہیں۔ حضرت علی کرم اللہ وجہہ نے ان تمام باتوں کے باوجود خارجیوں سے مذاکرات کئے تھے۔ عامر لیاقت حسین نے کہا کہ پاکستانی قوم نے تو مدارس کے شہداء، مساجد کے شہداء، امام بارگاہوں اور جلوس کے شہداء ، بازاروں کے شہداء کو فراموش کیا ہے تحریک طالبان صرف حکیم اللہ محسود کو فراموش کردے اور مذاکرات کرے۔ انہیں چاہے خارجی کا نام دیں یا طالبان کا نام دیں ان سے ہر حال میں پہلے مذاکرات کرنے ہوں گے اس کے بعد طے ہوگا کہ آپریشن کیا جائے یا نہیں۔ پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ حکومت کو 20نومبر کی ڈیڈلائن دیدی ہے ،اگر حکومت آگے نہیں بڑھے گی تو پاکستان کے عوام، سیاسی جماعتوں اور دینی قیادت کو یکجا کر کے نیٹو سپلائی روک دیں گے،80فیصد طالبان مذاکرات چاہتے ہیں اور پاکستان مخالف نہیں ہیں۔شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ تحریک انصاف آل پارٹیز کانفرنس میں پیدا ہونے والے قومی اتفاق رائے کا تسلسل جاری رکھنا چاہتی ہے، سیاسی پوائنٹ اسکورنگ نہیں کرنا چاہتے اور نہ ہی حکومت کو نیچا دکھانا چاہتے ہیں، آل پارٹیز کانفرنس کے دوران ہمارا کردار مثبت رہا ، ہم حکومت کے ساتھ تعاون کررہے ہیں لیکن حکومتی حکمت عملی ابھی تک واضح نہیں ہے کہ وہ کیا کرنا چاہتے ہیں۔تحریک انصاف نے حکومت کو 20نومبر کی ڈیڈلائن دیدی ہے کہ وہ واضح پالیسی اختیار کرے اور امریکا سے یقین دہانی لے کہ اگر ہمارے مذاکرات ہونے ہیںتو امریکا ڈرون حملہ کر کے امن پروسس کو سبوتاژ نہیں کرے گا۔اگر حکومت آگے نہیں بڑھے گی تو پاکستان کے عوام، سیاسی جماعتوں اور دینی قیادت کو یکجا کر کے نیٹو سپلائی روک دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ میجر جنرل نیازی کی شہاد ت پر ہمیں اتنا ہی دکھ ہے جتنا کسی معصوم شہری کی ہلاکت پر ہوتا ہے۔
http://beta.jang.com.pk/NewsDetail.aspx?ID=143571
--
for more updates please visit official web site www.aamirliaquat.com
Follow on Twitter: @AamirLiaquat
To get Dr Aamir Liaquat messages on your cell just type "F @aamirliaquat and SEND to 40404